Select Page

Category: Edition 9

حرف آغاز

مسافر….سفر ….اورمنزل اس جہان ِ رنگ و بو میں ہر شئے مسافر ہے۔ ہر شئے موجود جامہ وجود پانے کیلئے سفر میں ہے ….لیکن اپنے اپنے رنگ میں….اپنی اپنی خوئے شوق کے مطابق ….اور اپنی ہی اُفتادِ ذوق کے موافق ! اس جہانِ ہست و بود میں ہر شئے اپنی نمود کی نہائت پر پہنچنے کیلئے محوِسفر ہے…. کہ اپنی نہائت کوپہنچ کر ہی وہ ہست ہوتی ہے …....

Read More

صلِّ علٰی صلِّ علٰی

حضرت واصف علی واصف ؒ کے شعری مجموعہ ”شب راز“ سے انتخاب تصویرِ حُسنِ بے نشاں صلِّ علٰی صلِّ علٰی لاریب شاہِ خُسرواں صلِّ علٰی صلِّ علٰی اے چہرہ ِ زیبائے تو ‘ شمس الضحیٰ بدرالدُجٰی اِرحم لنا اے جانِ جاںصلِّ علٰی صلِّ علٰی مازاغ چشمِ سرمگیں ‘ واللّیل زلفِ عنبریں یٰسین دندانِ دہاں صلِّ علٰی صلِّ علٰی محمود سے حامد ہوا ‘ احمد محمد مصطفےٰ حٓم کا ہے...

Read More

امام حسینؑ

حضرت واصف علی واصف ؒ کے شعری مجموعہ ”شب راز“ سے منقبت اور رباعیات رہبرِ کارواں حسین ؑ‘ رہرہِ بے گماں حسین ؑ آج مگر کہاں حسین ؑ ‘ مرکزِ ہر فغاں حسین ؑ ہائے قتیلِ بے خطا‘ ہائے شہیدِ بارضا دشتِ بلا میں بے نوا ‘ راقمِ داستاں حسین ؑ اصغرؑ و اکبرؑ و عباسؑ ‘ کوئی نہیں ہے آج پاس گویا وفا ہے حرفِ یاس ‘ پیکرِ...

Read More

تلاش

حضرت واصف علی واصفؒ کی تصنیف ”دل دریا سمندر“ سے انتخاب ہر انسان کسی نہ کسی شئے کی تلاش میں سرگرداں ہے۔ کوئی کچھ چاہتا ہے ‘کوئی کچھ ڈوھونڈ رہاہے ۔ انسانوںکے ہجوم میں آرزوﺅں کا بھی ہجوم ہے۔ دشمن ‘ دشمن کی تلاش میں ہے اور دوست ‘ دوست کی تلاش میں۔ کائنات کی تمام اشیاءکا ہمہ وقت مصروفِ سفر رہنا کسی انوکھی تلاش کا اظہار ہے۔ آزو...

Read More

غزل الغزلات

حضرت واصف علی واصف ؒ کے شعری مجموعہ ”شب چراغ“ سے انتخاب سنبھل جاﺅ چمن والوخطر ہے ہم نہ کہتے تھے جمالِ گُل کے پردے میں شرر ہے ہم نہ کہتے تھے لبوں کی تشنگی کو ضبط کااک جام کافی ہے چھلکتا جام زہرِ کارگر ہے ہم نہ کہتے تھے زمانہ ڈھونڈتا پھرتا ہے جس کو اِک زمانے سے محبت کی وہ اِک پہلی نظر ہے ہم نہ کہتے...

Read More